دوسرے کنار ے پر

وقت کے دوسرے کنارے پر کون ہے

میں لاپتا ہو چکا ہوں

وقت کے رتھ پر کوئی نہیں

چاند انگوٹھی میں جڑا ہوا ہے

شہ رگ کٹ چکی ہے

صرف سانپ کا زہر جاگ رہا ہے

نیلے ہونٹوں پر

پیاسے جسموں کی پکار ہے

وقت کے دوسرے کنارے پر کون پے

کیا میرا خدا

پھر میری تخلیق کر رہا ہے

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s